گلگت بلتستان کے دو بڑے دہشت گرد: پولیس گردی کی انتہا

ضلع دیامر گلگت بلتستان-بیورو رپورٹ

Untitled-1 copy

دیامر پولیس کا شرمناک کارنامہ،اپنی انکھوں پر پٹیاں باندھ کر دیامر کی تحصیل داریل پھنگیچ سے تعلق رکھنے والے چوتھی کلاس کے 8سالہ طالب علم زوہیب اللہ پرانسداد دہشت گردی کا ایکٹ لگا دیا۔پولیس سٹیشن داریل میں 8سالہ زوہیب اللہ کے خلاف مقدمہ علت نمبر19/14پولیس سٹیشن داریل بجرائم زیر دفعات 342/353/186/171-F/149/147/506(II)392/148 تعزیرات پاکستان و دفعات (L)21،6/7انسداد دہشت گردی ایکٹ لگا کر ملزم قرار دے دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق 8جون 2015کو گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی کیلئے ہونے والے الیکشن میں دیامر کی تحصیل داریل کے حلقہ نمبر 3میں ایک سیاسی جماعت کے کارکنوں اور پولیس کے مابین تصادم ہوا تھا، جس کے نتیجے میں ایک پولینگ آفیسر سمیت درجنوں مقامی لوگ زخمی ہوگئے تھے۔

تصادم کے بعد دیامر پولیس نے درجنوں لوگوں کے خلاف انسداد دہشت گردی کا مقدمہ درج کیا تھا ،جن میں داریل پھنگیچ سکول میں زیرِ تعلیم جماعت چہارم کا 8سالہ طالب علم زوہب اللہ پر بھی پولیس نے دہشت گردی کے دفعات لگا کر ملزم قرار دیا۔

گزشتہ 26فروری 2016کو انسداد دہشت گردی گلگت بلتستان کی عدالت نے۸سالہ زوہیب اللہ سمیت 11افراد کو بعد از ارتکاب جرم فرار ہو کر گرفتاری نہ دینے پر نوٹس جاری کیا ،اور مذکورہ تمام ملزمان کو حکم جاری کیا کہ وہ وقت پر عدلت میں حاضر ہوکر اپنی کیس کی پروری کریں بصورت دیگر یکطرفہ کارروائی عمل میں لایا جائیگا۔ ادھر۸سالہ زوہب اللہ کے والد جہانزیب خان کا کہنا ہے میرا بیٹا معصوم اور بے قصور ہے، پولیس نے جان بوجھ کر میرے 8سالہ بچے پر انسداد دہشت گردی کا مقدمہ درج کیا، جس سے میرے بیٹے کا تعلیمی کیریر تباہ ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ۸ جون کو میرے بیٹے پر پولیس نے فائرنگ کرکے زخمی کر دیا تھا، جب میں ایف آئی آر درج کرنے کیلئے تھانہ گیا تو ایف آئی آر درج کرنے کا ڈرامہ رچا کر اُلٹا میرے معصوم بچے پر دہشت گردی کا ایکٹ لگا دیا گیا، جو کہ ظلم اور پولیس گردی کی  انتہا ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان تحریکِ انصاف کے امیدوار ڈاکٹر محمد زمان، جن کی موجودگی میں یہ سارا کیس عمل میں آیا تھا، اس وقت کارکنوں کو بے یار و مدد گار چھوڑ کر عرب میں موجود ہیں جس پر حلقے کے متاثرہ عوام میں غم و غصہ پایا جاتا ہے، گلگت بلتستان میں راجا شہباز کی عدالت ڈاکٹر محمد زمان کو بھی اشتہاری قرار دے چُکی ہے۔ 

آٹھ سالہ زوہیب کی میڈیا کے توسط سے سے انصاف کی اپیل کی ویڈیو دیکھنے کے لئے یہاں کلک کریں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s