پی آئی ے حادثہ :انسانی جانوں کے اس بڑے نقصان کو محض ایک حادثه کهه کر بھول نھیں جانا چاھیے – احسان علی ایڈووکیٹ

چترال سے اسلام آباد آنے والی PIA کے جھاز کا تباه ھونا اور اس میں موجود 47 مسافروں کی ھلاکت بلاشبه ایک بڑا افسوس ناک واقعه ھے اس میں مرنے والوں کے متاثره خاندانوں سے اظھار یکجھتی کی ضرورت ھے.مگر انسانی جانوں کے اس بڑے نقصان کو محض ایک حادثه کهه کر بھول نھیں جانا چاھیے دیکھا جاۓ تو اس حادثے کے رونما ھونے میں چیرمین PIA دیگر اعلی افسران CAA کے اعلی حکام وزیر ھوا بازی اور ان سب کے نگران اور نااھل بدعنوان چیرمین PIA کو نامزد کرنے والے وزیراعظم پاکستان یه سب اس حادثے کے براه راست ذمه دار ھیں.


اس حادثے کے رونما ھونے میں چیرمین PIA دیگر اعلی افسران CAA کے اعلی حکام وزیر ھوا بازی اور ان سب کے نگران اور نااھل بدعنوان چیرمین PIA کو نامزد کرنے والے وزیراعظم پاکستان یه سب اس حادثے کے براه راست ذمه دار ھیں.


ان سب کی نااھلی لاپرواھی مجرمانه غفلت بدانتظامی اور بدعنوانی کی وجه سے پرانے ناقص ھوابازی کیلیے خطرناک قرار دی جانے والے ATR طیاروں کی محض زیاده کمیشن کی وجه سے خریدنے اور پچھلے دس سالوں میں بار بار حادثوں کے باوجود انھیں replace نه کرنے اور PIA کے محنت کشوں کی طرف سے دی جانے والی سالانه اربوں کی آمدن کو بدعنوان اعلی افسران اور حکمرانوں کی کرپشن اور عیاشیوں کے نزر ھونے اور حکمرانوں کی توجه PIA کی بھتری کی طرف ھونے کے بجاۓ اسے بدنام کرکے پرائیوٹائز کرنے اور اسے اپنے کسی من پسند سرمایه دار کے حواله کرنے په مرکوز ھے.اس لیے یه حادثه نھیں بلکه مجرمانه غفلت لاپرواھی عدم توجه کی وجه سے ھی یه جھاز حادثے کا شکار ھو گئی ھے اس لیے یه قتل ھے ان تمام معصوم مسافروں کے قاتل مندرجه بالا افراد ھیں ان مسافروں کے لواخقین کو چاھیے که وه وزیراعظم سمیت پی آئی اے اور سول ایویشن اتھارٹی کے ذمه دار اعلی افران کے خلاف 47 افراد کے قتل کا مقدمه درج کرا دیں آئینده ایسے واقعات کو رونما ھونے سے روکنے کیلیے یه بڑا قدم اٹھانا ضروری ھے جھاں تک کارپوریٹ میڈیا کا تعلق ھے اس نے منافقت اور موقع پرستی اور عام انسان دشمنی کی انتھا کردی ھے بالائی طبقے سے تعلق رکھنے والے ایک تبلیغی کے علاوه 46 ھلاک شده افراد ان نام نھاد میڈیا مافیاز کو انسان نھیں بلکه baggage نظر آ رھے ھیں کارپوریٹ میڈیا کی عام انسان دشمنی مرده باد

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s